Khawab Main Khud Ko Paani Main Doobty Dekhna

Khawab Main Khud Ko Paani Main Doobty Dekhna

Khwab KI Tabeer

Khawab Main Khud Ko Paani Main Doobty Dekhna

خواب میں خود کو پانی میں ڈوبتے دیکھنا

Khawab Main Khud Ko Paani Main Doobty Dekhna Find Dream meaning of Khawab Main Khud Ko Paani Main Doobty Dekhna and other dreams in Urdu. Dream Interpretation & Meaning in Urdu. Read answers by islamic scholars and Muslim mufti. Answers taken by Hadees Sharif as well. Read Khawab Main Khud Ko Paani Main Doobty Dekhna meaning according to Khwab Nama and Islamic Dreams Dictionary.

حضرت ابن سیرین رحمتہ اللہ تعالیٰ علیہ نے فرمایا ہے ۔ اگر دیکھے کہ دریا میں ڈوبا ہے اور مرا ہے ۔ دلیل ہے کہ بادشاہ اس کو ہلاک کرے گا ۔ اور اگر دیکھے کہ پانی اس کو نیچے لے گیا ہے اور پھر اوپر لایا ہے اور مرا نہیں ہے ۔ دلیل ہے کہ دنیا کے کام سے ہاتھ اٹھائے گا اور دین کی اصلاح اور آخرت کا راستہ تلاش کرے گا ۔
حضرت جابر مغربی رحمتہ اللہ تعالیٰ علیہ نے فرمایا ہے ۔ اگر دیکھے کہ چو پائے کسی مکان یا دکان یا باغ میں ڈوب گئے ہیں ۔ دلیل ہے کہ کسی مشکل کام میں عاجز ہو گا اور آخر کار رہائی پائے گا ۔ حضرت جعفر صادق علیہ السلام نے فرمایا ہے کہ غرق ہونا یا ڈوب جانا خواب میں چار وجہ پر ہے ۔ (۱)مال بہت سا (۲)اقبال (۳)صحبت ساتھ بد مذہب لوگوں کے(۴)منفعت۔

Khawab Main Khud Ko Paani Main Doobty Dekhna The Prophet (peace and blessings of Allaah be upon him) said: If you see the river is drowned and dead. It is argued that the King will kill him. And if you see that the water has taken it down and then has brought it up and there is no dead. It is argued that he will raise hands from the work of the world and seek righteousness and find the path of the Hereafter.
Hazrat Jabir has said by the western prophet. If you see that the cubs are sown in a house or a shop or a garden. It is argued that in some difficult work, it will be embarrassed and will eventually be released. Hazrat Jafar Sadiq (peace be upon him) said, “It is four reasons for dreaming or drowning.” (1) wealth (2) Iqbal (3) with bad companions of people (4) negligence.

Recent Posts:

اچھا خواب نعمتِ خدا وندی

حضورﷺ نے ارشاد فرمایا ” بشارتوں کے سوا کوئی چیز باقی نہیں رہی ۔ صحابہ نے عرض کیا ےیا رسولاللہ بشارتوں سے کیا مراد ہے آپ نے فرمایا سچا خواب ۔(صحیح بخاری عن ابی ھریرہ) بخاری ومسلم کی متفق علیہ حدیث ہے آنحضرت ﷺ نے ارشاد فرمایا کہ سچا خواب نبوت کا چھیاسواں حصہ ہے ۔

اس حدیث شریف معلوم ہوا کہ سچا خواب رویائے صالحہ علوم نبوت کا ایک جزو ہے اور علم نبوت باقی ہے گو انبیاءکرام کی آمد کا سلسلہ موقوف ہوچکا دوسرے لفظوں میں سچا خواب علوم نبوی کا عکس ہے۔

خواب کی اقسا م

امام محمد بن سیرین ارشاد فرماتے ہیں کہ خواب تین قسم کے ہوتے ہیں ۔

  • 1- مبشرات خداوندی –

2- تخویفِ شیطان) شیطان کے زیرِ اثر ) –

3- حدیثِ نفس یعنی ذہنی اور دماغی خیلات کا عکس –

اس تقسیم سے ظاہر ہوتا ہے کہ خواب کے تمام اقسام صحیح قابلِ تعبیر اوردر خوراعتناء نہیں ہوتے تعبیر اور اعتبار کے لائق وہی خواب ہوتے ہیں جو حق تعالیٰ کی طرف سے بشارت اور اعلام پر مبنی ہوں۔

علم تعبیر کے چھ مشہور امام

-علم تعبیر میں درج ذیل چھ آئمہ کرام کے اقوال کے بطور سند پیش کیا جاتا ہے

  1. حضرت دانیال علیہ اسلام
  2. حضرت امام جعفر صادق رضی اللہ تعالیٰ علیہ
  3. حضرت امام محمد بن سرین رحمتہ اللہ علیہ
  4. حضرت امام جابر مغربی رضی اللہ تعالیٰ علیہ
  5. حضرت امام ابراہیم کرمانی علیہ رحمتہ اللہ علیہ
  6. حضرت امام اسمعیل بن شوکت رحمتہ اللہ علیہ

تعبیر بیان کرنے کیلئے ضروری علوم

  1. ۔علم تفسیر
  2. علم ضرب الامثال
  3. علم حدیث
  4. اشعار عرب
  5. علم اشتقاق (صرف)
  6. نوادر
  7. علم الغات
  8. علم الفاظ متد اَولہ

چنانچہ ایسے علماء ہے تعبیر بیان کرنے کے اہل ہیں جو ان علوم کے ماہر اور متقی پرہیزگار ہوں ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *